143

افغا ن راہنما پاکستان پر الزام تراشی کی بجائے اپنے ملک میں دہشتگردوں کے خاتمے پر توجہ دیں ، پا کستا ن

اسلام آباد – ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا ہے کہ پاکستانی اہلکار عالمی امن کیلئے بھی قربانیاں دے رہے ہیں، کانگو میں نائیک نعیم رضا نے جام شہادت نوش کیا جبکہ ایک سپاہی زخمی ہوا۔پاک ، افغان سرحد پر پاکستان نے 975 چوکیاں قائم کی ہیں جبکہ افغانستان نے صرف 200چوکیاں بنائی ہیں ، افغانستان سے پاکستانی علاقوں پر 470حملے کیے گیے ، دفترخارجہ میں ہفتہ وار پریس بریفنگ کے دوران ترجمان دفترخارجہ نے کہا کہ پاکستان میں خطے میں امن کا خواہاں ہے ، افغانستان سے دہشتگردپاکستان میں دہشتگردی کی کاروائیوں میں ملوث ہیں لہذا دونوں ممالک کے درمیان سرحدپر باڑ لگانا ناگزیر ہے، پاکستان نے افغان سرحد پر 975چوکیاں قائم کی ہیں، ترجمان دفترخارجہ نے افغان طالبان یا حقانی نیٹ کے ساتھ تعاون کے افغان الزام کو یکسر مسترد کردیا۔ افغا ن راہنماؤں کو پاکستان پر الزام تراشی کی بجائے ٹی ،ٹی، پی ، جماعت الاحرار کی پناہ گاہوں اور دہشتگردوں کے خاتمے پر توجہ دینی چاہیے، پاکستان ہرقسم کی دہشتگردی کی مذمت کرتاہے، افغانستان کو حوالے کیے گئے 27مشتبہ افراد کا تعلق افغان طالبان اور حقانی نیٹ ورک سے ہے۔ پاکستان چاہتا ہے کہ افغان مسئلہ کا حل افغانی عوام کی امنگوں کے مطابق ہونا چاہیے، پاکستان میں قیام امن کیلئے افغان مہاجرین کی جلد واپسی ضروری ہے، پاکستان افغان مہاجرین کی فوری اورباعزت واپسی چاہتا ہے، افغانستان کے اندر مفاہمت ، افغانستان کا داخلی معاملہ ہے، پاکستان نے دہشتگردی کی روک تھام کے لیے خودکش حملوں اس دہشتگردی کے خلاف فتویٰ دیا ۔پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں 123 بلین ڈالر کا نقصان اٹھایا ، پیغام پاکستان فتوے کے تحت صرف سٹیٹ جہاد کا حکم دے سکتی ہے ، فتوے کے تحت خودکش حملے جو ناجائز قرار دیا گیا، فتوی پاکستانیوں کے بیرون ملک جا کر کسی اور کی مدد سے بھی روکتا ہے۔امریکہ کے ساتھ تعلقات کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں ترجمان نے کہا کہ پاکستان کے امریکہ کے ساتھ انتہا ئی اہم اور کلیدی تعلقات ہیں، البتہ امریکی انتظامیہ میں بعض لوگ پاکستان کو افغانستان میں شکست پر قربانی کا بکرہ بنانا چاہتے ہیں۔پاکستان کی خارجہ پالیسی عوام کی امنگوں اور قومی مفادات کے مطابق ہے۔ ڈاکٹر فیصل نے کہا کہ یاسین ملک کے سشما سوراج کے نام کھلے خط میں بھارتی دوہرے معیار کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا، خط میں مجاہدین کو قانون تک رسائی کے بغیر پھانسی دینا، ماورا ے عدالت قتل، جیلوں میں کشمیریوں کیساتھ غیر انسانی سلوک کو عیاں کیا گیا ہے،خط میں مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی انسانیت سوز مظالم کا احاطہ کیا گیا ہے، ۔ترجمان دفترخارجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان بھارت کے ساتھ تعلقات کی بہتری کیلئے مخلص ہے تاہم بھارت کو اپنا رویہ تبدیل کرناہوگا۔ترجمان نے بتایا کہ گوادر اقتصادی فری زون کا افتتاح کا مقصد گوادر کی ترقی ہے، گوادر ہوائی اڈا اور مشرقی ساحلی شاہراہ بھی اس زون کا حصہ ہے، شپ یارڈ، آئل ریفائنری بھی اس اہم منصوبے کا حصہ ہے، گوادر میں 150 بستر کا ہسپتال بھی منصوبے کا کلیدی حصہ ہے۔ افغانستان کیساتھ 5 ورکنگ گروپس پر گفتگو کی تجاویز ہیں، پاکستان اور افغانستان کے مابین پہلا اجلاس کل کابل میں ہو گا، ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹرمحمد فیصل نے کہا کہ پاکستان انٹیلیجنس، دفاعی، مہاجرین کے مسئلہ، تجارت اور اقتصادیات کے ورکنگ گروپس شامل ہیں، پاکستان 70 سے زائد ممالک کے ساتھ انٹیلیجنس شیئر نگ کر رہا ہے، انہوں نے کہا کہ انسانی سمگلنگ کو میڈیا کو آگہی فراہم کرے کہ پاکستانی غیر قانونی طور پر دیگر ممالک جانے سے اجتناب کریں، گوادر اور چاہ بہار ایک دوسرے کی معاون بندرگاہیں ہیں۔ ترجمان نے بتایا کہ انڈونیشیاء میں قید پاکستانی شہری ذوالفقار علی کی رہائی کیلئے کوشاں ہیں۔انڈونیشیا کے صدر نے اہلیہ کے ہمراہ پاکستان کادورہ کیا ، پاکستانی شہری ذوالفقار علی کو انسانی بنیادوں پر رہائی کا کہا ہے انڈونیشن صدر کی وزیراعظم سے ملاقات ہوئی ملاقات میں باہمی تعلقات پر بات کی گئی ۔ سری لنکن جیلوں میں 91 قیدی ہیں، 41 کو سزائیں ہو چکیں،سری لنکا سے پاکستانی قیدیوں یا مجرمان کی وطن واپسی یا منتقلی کیلئے کوشاں ہے۔ایک سوال کے جواب میں ترجمان نے کہا کہ پاکستان تمام تر صلاحیت رکھتے ہوئے بین الاقوامی سطح پر اپنا کردار ادا کرنا چاہتا ہے، پاکستان جوہری عدم پھیلاؤ کا حامی اور مسلسل اس سلسلے میں اپنا کردار ادا کر رہا ہے۔ پاکستان، ایم ٹی سی آر، آسٹریلیا گروپ یا ویزینار نظام میں شمولیت کے خواہاں ہے۔پاکستان، اس سلسلے میں فیصلہ وقت آنے پر کرے گا، پاکستان میں 27 لاکھ افغان مہاجرین ہیں، 13 لاکھ رجسٹرڈ، 14 لاکھ غیر رجسٹرڈ ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں