91

حریت قائدین کی جانب سے آج جمعہ کو ’’شوپیاں چلو‘‘ کال ، کشمیریوں کو فورسز کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ، حریت قائدین

سرینگر (آن لائن) حریت قائدین سید علی گیلانی ، میرواعظ عمر فاروق اور یاسین ملک نے مقبوضہ وادی میں قتل و غارت، خوف و دہشت ، مار دھاڑ ، گرفتاریاں اور پرتشدد کارروائیوں کے ذریعے ماحول کو خوفناک بنانے کے خلاف آج ( جمعہ کو ) شوپیاں کی مرکزی جامع مسجد میں اجتماعی طور پر نماز جمعہ ادا کرنے اور شہدائے شوپیاں کو خراج عقیدت پیش کرنے کا اعلان کرتے ہوئے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ اس روز مشترکہ مزاحمتی قیادت کے ساتھ شوپیاں کا رخ کریں جہاں احتجاجی دھرنے کے ذریعے عالمی ضمیر جو جھنجھوڑنے کی کوشش کی جائے گی۔اپنے مشترکہ بیان مین حریت قائدین نے کہا کہ کشمیر کو ایک قتل گاہ میں تبدیل کر دیا گیا ہے جہاں سرکاری فورسز خود کو حاصل بے پناہ اختیارات کے بل بوتے پر کسی بھی نہتے شہری کو قتل کرنے کا لائسنس رکھتے ہیں انہوں نے کہاکہ شوپیاں میں سرکاری فورسز کے ذریعے نہتے افراد کے قتل اور درجنوں لوگوں کو زخمی کئے جانے کو سرکاری دہشتگردی سے تعبیر کرتے ہوئے کہ اکہ کشمیر کو عملاً ایک پولیس ریاست میں تبدیل کر دیا گیا ہے جہاں لوگوں کے جملہ بنیادی حقوق کو طاقتً کے بل پر سلب کر لیا گیا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں