paragon-scandal 31

خواجہ برادران کے جسمانی ریمانڈ میں5جنوری تک توسیع

اسلام اباد (اردو سکوپ) احتساب عدالت نے خواجہ برادران کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع کردی،عدالت نے خواجہ سعد رفیق اور سلمان رفیق کے جسمانی ریمانڈ میں 5 جنوری تک توسیع کردی

تفصیلا ت کے مطابق پیراگون ہاؤسنگ سکینڈل میں نیب نے خواجہ سعد رفیق اور سلمان رفیق کو احتساب عدالت میں پیش کیا- احتساب عدالت کے جج نجم الحسن نے کیس کی سماعت کی۔ نیب ٹیم نے خواجہ برادران کے مزید 15 روز کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی

نیب نے خواجہ برادران سے پوچھاکہ آپ نے کن لوگوں کوسروسزدیں،خواجہ سعد رفیق اورسلمان رفیق نے تفصیل نہیں دی،تفتیشی نے مزیدکہا کہ پیراگون سے 6.2 ملین سعدرفیق کے اکاؤنٹ میں منتقل ہوئے،سعدرفیق نے بتایایہ کمیشن کی رقم ہے،یہ نہیں بتایاکس زمین کے بدلے کمیشن ملا

فتیشی افسر نے کہا کہ شاہدبٹ نے کہاخواجہ برادران نے کمرشل زمین لوگوں کوبیچی،سعدرفیق نے کہاہم نے کسی کاکوئی پیسہ نہیں دینا،تفتیشی افسر کا کہناتھا کہ قیصر امین بٹ نے بیان دیا کہ خواجہ برادران پیراگون سٹی کے مالک ہیں،

ہمارے پاس 100کے قریب متاثرہ لوگ آئے ہیں، 2 ارب روپے کے کمرشل پلاٹ غیر قانونی طور پر بیچے گئے،

نیب تفتیشی افسرنے مزید کہا کہ پٹواریوں نے بتایا ہے کہ 40 کنال سرکاری اراضی بھی بیچی گئی ہے، جن لوگوں نے یہ جگہ خریدی ہے ان کا بیان ریکارڈ کرنا ہے۔

عدالت نے دلائل مکمل ہونے پر خواجہ سعداورسلمان رفیق کے جسمانی ریمانڈمیں توسیع پرمحفوظ فیصلہ سنادیا ،عدالت نے خواجہ سعد رفیق اور سلمان رفیق کے جسمانی ریمانڈ میں مزید5 جنوری تک توسیع کردی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں